Home  
    Mayor  
    Deputy Mayor  
    Metropolitan Commissioner  
    Departments  
    KMC Directory  
    Photo Gallery  
    Video Gallery  
       
 
 
       
    Tender Information  
    KMC Function  
    Tenders  
    Grand Auctions  
    Section 144 CR.P.C  
    Notifications  
    KMC Resolution  
       
 
 
       
    Public Notice  
    Information  
    National Holidays  
    Prayer Timings  
    Archive  
       


 
 
 
 
     
  میئر کراچی وسیم اختر نے کہا کہ پارک یا میدان میں شادی ہال بن جانے کو جائز قرار نہیں دیا جاسکتا البتہ رہائشی مکانات کے حوالے سے یہی کہا جاسکتا ہے کہ غریب لوگوں کو دھوکا دیا گیا -  
     
  21-Dec-2017  
     
   
     
  میئر کراچی وسیم اختر کی صدارت میں جمعرات کے روز منعقد ہونے والے بلدیہ عظمیٰ کراچی کی کونسل کے اجلاس میں اتفاق رائے سے منظور کی گئی ایک قرارداد کے ذریعے حکومت پاکستان اور اعلیٰ عدالتوں سے اپیل کی ہے کہ تجاوزات کے خلاف عدالت کے فیصلے کے تحت کارروائی میں ان لوگوں کے ساتھ انصاف کیا جائے جو ان رہائشی عمارتوں میں رہ رہے ہیں کیونکہ وہاں کے مکینوں نے اپنی زندگی بھر کی جمع پونجی اس پر لگا دی ہے اور ان کے پاس سرکاری کاغذات اور بجلی گیس اور پانی کے بل بھی موجود ہیں لہٰذا انہیں اس فیصلے سے مبرا کیا جائے اور انصاف کے تقاضوں کو پورا کرتے ہوئے انہیں بے گھر نہ کیا جائے،میئر کراچی وسیم اختر نے قانونی امور کمیٹی کے چیئرمین عارف خان ایڈوکیٹ سے کہا کہ وہ ایوان کے اراکین کے ہمراہ اس معاملے کو سپریم کورٹ میں لے کر جائیں تاکہ ان متاثرین کی داد رسی ہوسکے، اس قرارداد کے موئید عارف خان ایڈوکیٹ نے کہا کہ یہ ایوان سپریم کورٹ کے فیصلے کی مکمل تائید کرتا ہے مگر دکھ کی بات یہ ہے کہ جن لوگوں نے ان جگہوں کو خریدا وہ حقیقت سے لاعلم تھے، متوسط طبقے کے لوگ ہیں اور انہوں نے سر چھپانے کے لئے بمشکل جگہ بنائی اور اس وقت وہ سخت پریشانی کی حالت میں ہیں، اگر ان کے خلاف کوئی زیادتی ہوگئی تو یہ بڑا المیہ ہوگا لہٰذا سپریم کورٹ ان کے معاملے پر ہمدردانہ غور کرے، امان خان آفریدی نے قرارداد کی تائید کرتے ہوئے ان لوگوں کے خلاف کارروائی کا مطالبہ کیا جنہوں نے چائنا کٹنگ کرکے تجاوزات کا راستہ بنایا ہے، انہوں نے سپریم کورٹ سے ایسے عناصر کے خلاف سوموٹو ایکشن لینے کی اپیل کی، میئر کراچی وسیم اختر نے کہا کہ پارک یا میدان میں شادی ہال بن جانے کو جائز قرار نہیں دیا جاسکتا البتہ رہائشی مکانات کے حوالے سے یہی کہا جاسکتا ہے کہ غریب لوگوں کو دھوکا دیا گیا لہٰذا انہیں سر چھپانے کی متبادل جگہ دی جائے ، قرارداد پر امان خان آفریدی ، کرم اللہ وقاصی ،فردوس شمیم نقوی، حنیف سورتی، انجینئر محمد عامر، نواز الحق نے بھی اپنے خیالات کا اظہار کیا اور کہا کہ اس غیرقانونی تجاوزات کے خلاف اقدامات میں کسی مصلحت پسندی سے کام نہ لیا جائے ہمیں چائنا کٹنگ مافیا سے جان چھڑانی ہیں انہوں نے کہا کہ کے ایم سی تمام اسٹیک ہولڈرز کو ساتھ لے کر ایک کمیٹی بنائے تاکہ شہر بھر میں تجاوزات کے خلاف موثر اور بھرپور کارروائی ہوسکے، انہوں نے یہ مطالبہ بھی کیا کہ جہاں جہاں چائنا کٹنگ ہوئی ہے وہاں اس معاملے کا تفصیلی جائزہ لیا جائے کہ کن لوگوں نے اس سے کتنا فائدہ اٹھایا ہے اور کون لوگ اس سے شدید متاثر ہوئے ہیں اور اس معاملے کو انسانی ہمدردی کی بنیاد پر عدالت کے سامنے رکھا جائے،اجلاس میں مجموعی طور پر 6قراردادوں کو اتفاق رائے سے منظور کیا گیا جبکہ ایک قرارداد کو برائے تجویز متعلقہ محکمے کو بھیجنے کا فیصلہ کیا گیا، دو ایک جیسی قراردادوں کے ذریعے بیت المقدس کو یہودی ریاست اسرائیل کا دارالحکومت تسلیم کرنے پر امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے متعصبانہ اور مسلم دشمن رویے کی شدید پرزور مذمت کی گئی اور حکومت پاکستان سے مطالبہ کیا گیا کہ سرکاری سطح پر بھی اس اعلان کے بعد پیدا ہونے والی صورتحال پر پاکستانی عوام کا موقف پیش کیا جائے اور حکومت او آئی سی اور اقوام متحدہ سمیت بین الاقوامی فورم پر احتجاج کرے، اس قرارداد کے موئیدجنید مکاتی نے کہا کہ دنیا بھر میں مسلمانوں پر ہونے والے مظالم کے خلاف مسلم امہ کو یکجہتی دکھانی چاہئے ، اسلامی ممالک باہمی تجارت کو فروغ دیں اور یورو اور ڈالر کی طرز پر اسلامی ممالک کی بھی اپنی کرنسی ہونی چاہئے تاکہ دنیا کے 57 اسلامی ممالک مسلمانوں کے حقوق کا تحفظ کرسکیں، قرارداد پر خواتین کونسلر تحسین عابدی،اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ مسلمانوں پر مظالم ڈھانے والے غیر ملکی عناصر کی مذمت کے ساتھ ساتھ ہمیں خود اپنے ملک میں موجود ان عناصر کی بھی مذمت کرنی چاہئے جو دہشت گردی کی پشت پناہی کررہے ہیں، اجلاس میں اتفاق رائے سے منظور کی گئی، ایک اور قرارداد کے ذریعے میئر کراچی سے درخواست کی گئی کہ وہ کراچی واٹر اینڈ سیوریج بورڈ کے نمائندگان کے ساتھ میٹنگ طلب کریں اور کونسل کی ایک کمیٹی تشکیل دی جائے جو واٹر بورڈ کے ان نمائندوں کے ساتھ رابطے میں رہے اور ایم ڈی واٹر بورڈ ایوان میں آکر کونسل ممبران کی شکایت سنیں اور ان کو یہ بتائیں کہ کراچی کو پانی کی فراہمی اور نکاسی کے لئے کتنی ڈسٹری بیوشن لائنوں کی ضرورت ہے اس کا تخمینہ مدت تکمیل بتائی جائے، میئر کراچی وسیم اختر نے کہا کہ یہ شہر کا اہم ترین مسئلہ ہے اور یہ بڑا گھمبیر معاملہ بن چکا ہے اس لئے اس ایوان میں موجود ہر جماعت سے ایک رکن اس کمیٹی میں شامل کیا جائے گا اور ہم ایم ڈی واٹر بورڈ سے یہ کہیں گے کہ وہ پانی و سیوریج کے مسائل کے حل کے لئے یہاں آکر اپنی پلاننگ سے ارکان کو آگاہ کریں،اجلاس کے دوران اتفاق رائے سے منظور کی گئیں دیگر قراردادوں میں کوئٹہ میں چرچ پر ہونے والے حملے کی بھرپور مذمت، اس واقعہ میں جاں بحق ہونے والے افراد کے لئے دعا اور پاک فوج اور دیگر قانون نافذ کرنے والے اداروں کو خراج تحسین پیش کیا گیا اور سانحہ کوئٹہ میں جاں بحق ہونے والوں سے اظہار یکجہتی کے لئے ایک منٹ کی خاموشی بھی اختیار کی گئی جبکہ ایک قرارداد کے تحت بلدیہ عظمیٰ کراچی کے محکمہ انفارمیشن ٹیکنالوجی کے بائی لاز کی منظوری بھی دی گئی اور کے ایم سی کی تمام اراضی اور مارکیٹوں کا مکمل کمپیوٹرائزڈ ریکارڈ کی تیاری کو بھی اس میں شامل کرنے پر اتفاق کیا گیا، اس قرارداد پر اظہار خیال کرتے ہوئے چیئرپرسن میڈیا مینجمنٹ کمیٹی صبحین غوری نے کہاکہ کے ڈی اے کی علیحدگی کے بعد کے ایم سی میں انفارمیشن ٹیکنالوجی ڈپارٹمنٹ کو ازسرنو منظم کیا جا رہا ہے جس کے لئے تمام محکموں سے متعلق ڈیٹا بیس کمپیوٹرائزڈ کیا جائے گا تاکہ تمام محکموں کو باہم منسلک کیا جاسکے، انہوں نے کہا کہ دو تین ماہ میں ان تمام چیزوں پر پیشرفت نظر آئے گی ، اجلاس کے دوران جن دیگر ارکان نے اپنے خیالات کا اظہار کیا ان میں جمال زیدی، حسن نقوی، مستجاب انور، کامریڈ جسکانی،فضل الرحمان اور دیگر شامل تھے، ارکان نے ماری پورروڈ کی خراب حالت کی طرف ایوان کی توجہ مبذول کراتے ہوئے اسے جلد از جلد موٹر ایبل بنانے کا مطالبہ کیا جس پر میئر کراچی نے کہا کہ وہ خود اس روڈ کا دورہ کرکے صورتحال دیکھ چکے ہیں اور جلد ہی وہاں مرمت کے کام شروع کردیئے جائیں گے، میئر کراچی نے اس موقع پر ہدایت کی کہ ارکان کی طرف سے کسی بھی مسئلے کی طرف توجہ دلائے جانے پر متعلقہ کمیٹی کے چیئرمین اس معاملے کے متعلق اپ ڈیٹ صورتحال بتائیں، چیئرمین یوسی 11 جمال زیدی نے شاہ فیصل کالونی میں صفائی ستھرائی کی تشویش ناک صورتحال سے ایوان کو آگاہ کرتے ہوئے فوری طور پر علاقے سے کچرا اٹھانے اور سڑکوں کی مرمت کا مطالبہ کیا  
     
     
 
News Photo Gallery
 
 
 
 
 
 
 
 
 

 
     
     

 

 

 

 

 
 
     
 

Copyright © 2011-2012 Karachi Metropolitan Corporation. All rights reserved.
The KMC will not be responsible for the content of external internet sites. / Login  / Webmail  / Webmail 2  / 1339 Executive Dashboard