Home  
    Mayor  
    Deputy Mayor  
    Metropolitan Commissioner  
    Departments  
    KMC Directory  
    Photo Gallery  
    Video Gallery  
       
 
 
       
    Tender Information  
    KMC Function  
    Tenders  
    Grand Auctions  
    Section 144 CR.P.C  
    Notifications  
    KMC Resolution  
       
 
 
       
    Public Notice  
    Information  
    National Holidays  
    Prayer Timings  
    Archive  
       


 
 
 
 
     
  میئر کراچی وسیم اخترنے جمعہ کی سہ پہر اپنے دفتر میں رین ایمرجنسی کے حوالے سے کے ایم سی اور ڈی ایم سیز کے مشترکہ اجلاس کے بعد میڈیا کے نمائندوں سے بات چیت کی -  
     
  14-Jul-2017  
     
   
     
  میئر کراچی وسیم اخترنے کہا ہے کہ مزید بارشوں کی پیشگوئی کے حوالے سے بلدیہ عظمیٰ کراچی نے ایس او پی بنا لی ہے مختلف محکموں میں تعیناتی کے منتظر افسران و دیگر ملازمین کا ایک پول بنایا ہے شہر میں بہت زیادہ بارشیں ہونے اورکسی بھی جگہ ایمرجنسی کی صورت میں اس افرادی قوت کو استعمال کیا جائے گا، بارشوں کے سلسلے میں تمام چھ ڈسٹرکٹس سے مشاورت کے علاوہ کے الیکٹرک اور واٹر بورڈ کو بھی آن بورڈ لے لیا ہے سب مل کر کام کریں گے تو شہر میں بہتری آئے گی، ان خیالات کا اظہار انہوں نے جمعہ کی سہ پہر اپنے دفتر میں رین ایمرجنسی کے حوالے سے کے ایم سی اور ڈی ایم سیز کے مشترکہ اجلاس کے بعد میڈیا کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے کیا، اس موقع پر بلدیہ شرقی کے چیئرمین معید انور، بلدیہ وسطی کے چیئرمین ریحان ہاشمی، بلدیہ ملیر کے چیئرمین جان محمد بلوچ ، بلدیہ جنوبی کے چیئرمین ملک فیاض، سٹی کونسل میں پارلیمانی لیڈر اسلم شاہ آفریدی، بلدیہ غربی کے ایڈمنسٹریٹر غلام فرید، ضلع کورنگی کے وائس چیئرمین سید احمر علی، واٹر بورڈ کے S.E غلام قادر، کے الیکٹرک کے ڈپٹی ڈائریکٹر عبدالحمید بھٹی ، ضلع شرقی کے میونسپل کمشنر منظور عباسی، سابق ٹائون ناظم اظہار احمد خان، سٹی کونسل مالیات کمیٹی کے چیئرمین ندیم ہدایت ہاشمی، لینڈ کمیٹی کے چیئرمین ارشد حسن، مشیر مالیات خالد محمود شیخ، ڈائریکٹر جنرل ورکس شہاب انور، سینئر ڈائریکٹر میونسپل سروسز مسعود عالم، سینئر ڈائریکٹر فوڈ اینڈ کوالٹی کنٹرول ڈاکٹر اصغر شیخ، ڈائریکٹر ٹیکنیکل ایس ایم شکیب اور دیگر افسران بھی موجود تھے، میئر کراچی نے کہا کہ شہر میں مزید بارش کے حوالے سے چھ کی چھ ڈسٹرکٹس نے اپنی تیاری مکمل کرلی ہے ،تمام ڈسٹرکٹس نے باہمی مشاورت کی ہے کچھ نالے اور پانی کی لائنیں چوک ہیں،واٹر بورڈ والوں کو پابند کر دیا ہے کہ فوری طور پر کم از کم مین ہول کی رکاوٹوں کو کلیئر کیا جائے تاکہ نکاسی آب میں سہولت ہو ، انہوں نے کہا کہ انڈرپاسز میں نکاسی آب کی لائنیں کلیئر کرنے کا کام جاری ہے ،ناظم آباد انڈرپاس تک کلیئر کرلیا ہے اور اب لیاقت آباد ، غریب آباد اور دیگر انڈرپاسز میں کام ہو رہا ہے انہیں بھی جلد ہی کلیئر کردیا جائے گا، مختلف سڑکوں پر پیچ ورک ہونا چاہئے لیکن مون سون کی وجہ سے فی الحال یہ کام روک دیا ہے بارشیں ختم ہونے کے فوراً بعد یہ کام شروع کریں گے ،پچھلی بارشوں میں کرنٹ لگنے سے جو اموات ہوئیں ان کے لئے کے الیکڑک کو معاوضہ کی ادائیگی کے لئے کہا ہے،انسانی قوت میں جو کچھ ہے ہم کررہے ہیں اور کوشش کریں گے کہ آئندہ شہر میں بارش رحمت ہو زحمت نہ ہو،انہوں نے کہا کہ کراچی میں نالوں کا سب سے بڑا ایشو کچرے کا ہے،صفائی ہونے کے بعد عوام دوبارہ کچرا نالوں میں ڈال دیتے ہیں جبکہ شہر کا زیادہ تر سیوریج بھی انہی نالوں میں ڈالا جاتا ہے فوری طور پر صورتحال کی بہتری کے لئے جہاں جہاں چوک پوائنٹ ہیں برساتی نالوں کو کلیئر کروا رہے ہیں اور اس کے لئے کرائے پر بھی مشینری لے رہے ہیں،جب جیل سے آیا تو معلوم ہوا نالوں کی صفائی کا ٹینڈر ہوچکا تھالہٰذا نالوں کی صفائی کے حوالے سے جہاں جہاں مجھے شک ہوا میں نے خود جا کر صورتحال دیکھی اور پھر اس کی ادائیگی کی گئی ، انہوں نے کہا کہ اگر ہم بارشوں میں ٹیم ورک کی طرح کام کریں گے تو شہر میں بہتری آئے گی ، ہماری دلچسپی پورے کراچی کے مسائل کے حل میں ہے اس کے علاوہ ہمارا کوئی ذاتی مفاد نہیں، ڈسٹرکٹ انتظامیہ بھی یہی سوچ رکھتی ہے ، نالوں کی صفائی کے حوالے سے سندھ حکومت سے فنڈز مانگے ہیں، امید کرتے ہیں سندھ حکومت فنڈز ریلیز کرے گی، بارشوں کے دوران ٹریفک پولیس کو سڑکوں پر ہونا چاہئے تاکہ ٹریفک کی روانی متاثر نہ ہو، میئر کراچی نے کہا کہ کے ایم سی کا رین ایمرجنسی 021-99215127ہے جس پر کسی بھی ہنگامی صورتحال میں رابطہ کیا جاسکتا ہے، قبل ازیں ضلعی بلدیاتی نمائندوں کے ہمراہ رین ایمرجنسی میٹنگ سے خطاب کرتے ہوئے میئر کراچی وسیم اختر نے ندیم ہدایت ہاشمی کو فوکل پرسن مقرر کرنے کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ محکمہ انجینئرنگ ، میونسپل سروسز، پارکس اور دیگر محکموں کے عملے پر مشتمل ایک خصوصی ٹیم بنائی جا رہی ہے جو کسی بھی ایمرجنسی صورتحال میں متعلقہ مقام پر فوری اقدامات کے لئے بھیجی جائے گی، بارشوں میں نکاسی آب کے لئے مشینری اور پمپس کی دستیابی یقینی بنانا ہوگی، اگر ڈسٹرکٹس کو اس حوالے سے کوئی ضروریات ہیں تو ہمیں آگاہ کریں ، وزیر اعلیٰ سندھ سے درخواست کی ہے کہ نالوں کی صورتحال اور سیوریج کے مسائل حل کرنے کے لئے ہم سب کو مل کر بیٹھنا ہوگا اور مسائل کا حل تلاش کرنا ہوگا، کم از کم سیوریج ٹریٹمنٹ پلانٹ ہی ٹھیک کرالیں جو خراب پڑے ہیں بصورت دیگر ہم ایک دوسرے کو الزام ہی دیں گے ، انہوں نے کہاکہ کل سے موسلادھار بارشوں کا سلسلہ شروع ہونے کی اطلاعات ہیں ہم پوری کوشش کر رہے ہیں کہ شہریوں کو برسات کے دوران مشکلات سے محفوظ رکھا جائے ، بلدیہ عظمیٰ کراچی اپنے زیر انتظام سڑکوں اور چوراہوں پر نکاسی آب کا کام انجام دے گی جبکہ اندرونی سڑکوں پر ضلعی انتظامیہ نکاسی آ ب کی ذمہ داری نبھائے گی۔اجلاس کے دوران بلدیہ جنوبی کے چیئرمین ملک فیاض اور بلدیہ ملیر کے چیئرمین جان محمد بلوچ نے کہا کہ کراچی کے مسائل ہمارے مشترکہ مسائل ہیں اور ہم مل کر ان مسائل کے حل کے لئے کام کریں گے اور اگر ضرورت ہوئی تو کراچی کے مسائل کے حل کے لئے وزارت بلدیات سے رجو ع کریں گے اور میئر کراچی کے شانہ بشانہ جدوجہد کریں گے ۔  
     
     
 
News Photo Gallery
 
 
 
 
 
 
 
 
 

 
     
     

 

 

 

 

 
 
     
 

Copyright © 2011-2012 Karachi Metropolitan Corporation. All rights reserved.
The KMC will not be responsible for the content of external internet sites. / Login  / Webmail  / Webmail 2  / 1339 Executive Dashboard