Home  
    Mayor  
    Deputy Mayor  
    Metropolitan Commissioner  
    Departments  
    KMC Directory  
    Photo Gallery  
    Video Gallery  
       
 
 
       
    Tender Information  
    KMC Function  
    Tenders  
    Grand Auctions  
    Section 144 CR.P.C  
    Notifications  
    KMC Resolution  
       
 
 
       
    Public Notice  
    Information  
    National Holidays  
    Prayer Timings  
    Archive  
       


 
 
 
 
     
  ڈپٹی میئر کراچی ارشد عبداللہ وہرہ نے پینے کے صاف اور صحت بخش پانی کی فراہمی، آلودگی سے پاک ماحول، معیاری کھانے پینے کی اشیاء اور وبائی امراض سے بچائو کیلئے مربوط اور موثر حکمت عملی اختیار کرنے کی ضرورت ہے-  
     
  13-May-2017  
     
   
     
  ڈپٹی میئر کراچی ارشد عبداللہ وہرہ نے کہا ہے کہ کراچی میں کھانے پینے کی اشیاء فروخت کرنے والوں کو حفظان صحت کے اصولوں پر نہایت ہی سنجیدگی سے عمل کرتے ہوئے ملاوٹ شدہ اور غیر معیاری اشیا ء کی فروخت کی روک تھام کرنے کیلئے سخت قوانین کے ساتھ ساتھ شہریوں کو بھی اپنا بھر پور کردار ادا کرنا ہوگا، شہریوں کو صحت و تندرستی کی بہتری، علاج و معالجے کی بہتر سہولیات ، پینے کے صاف اور صحت بخش پانی کی فراہمی، آلودگی سے پاک ماحول، معیاری کھانے پینے کی اشیاء اور وبائی امراض سے بچائو کیلئے مربوط اور موثر حکمت عملی اختیار کرنے کی ضرورت ہے، ان خیالات کا اظہار انہو ںنے مقامی ہوٹل میں آل پاکستان ریسٹورنٹ ایسوسی ایشن کی جانب سے میٹ اینڈ پولٹری سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے کیا، اس موقع پر چیئرمین آل پاکستان ریسٹورنٹ ایسوسی ایشن شوکت علی، فوڈ سائنس اینڈ ٹیکنالوجی ڈپارٹمنٹ جناح یونیورسٹی فار وومن کے پروفیسر ڈاکٹر راشد علی، ڈائریکٹر پاکستان اسٹینڈرڈ اینڈ کورالٹی کنٹرول اتھارٹی انجینئر اختر اے بوگیو، چیئرمین کنزیومر کمیٹی ایمٹی انٹر نیشنل عمران شہزاد،کراچی کے مشہور معروف ریسٹورینٹس کے مالکان ،جامعہ کراچی اور جناح یونیورسٹی کے طلبہ و طالبات کی بڑی تعداد نے شرکت کی، ڈپٹی میئر کراچی نے کہا کہ بلدیہ عظمیٰ کراچی کی فوڈ اینڈ کوالٹی کنٹرول لیبارٹری کو دوبارہ فعال کردیا گیا ہے اور آئندہ ہفتے اس کا باقاعدہ افتتاح کردیا جائے گا ، ملاوٹ شدہ اشیاء کی بھر مار عوام اپنے اتحاد اور طاقت سے ہی روک سکتے ہیں، شہر میں سب سے بڑا مسئلہ ملاوٹ شدہ اشیاء کی فروخت اور فراہمی ہے، شعور کی دولت تو بڑھ رہی ہے لیکن ملاوٹ شدہ اشیاء کی روک تھام کے سد باب کو تلاش کرنے اور اسے ختم کرنے کیلئے انتہائی مضبوط پالیسی مرتب کرنے کی ضرورت ہے، کھانے پینے کی اشیاء فروخت کرنے والے فوڈ لائسنس حاصل نہیں کرتے، شہر میں ایک مذبح خانہ شہر کی ضرورت کے لئے کافی ہے اس میں اضافے کی شدید ضرورت اور مرغی کا گوشت فروخت کرنے والے دکانداروں کو صحت عامہ کا مکمل خیال رکھنا چاہئے، چیئرمین آل پاکستان ریسٹورنٹ ایسوسی ایشن شوکت علی نے کہا کہ شہر کراچی میں معیاری ریسٹورنٹ کی ہم بھر پور معاونت کررہے ہیں اور حکومتی اداروں کے ساتھ مکمل تعاون کررہے ہیں، فوڈ سائنس اینڈ ٹیکنالوجی ڈپارٹمنٹ جناح یونیورسٹی فار وومن کے پروفیسر ڈاکٹر راشد علی نے کہا کہ سرخ گوشت کھانا صحت کے لئے مضر نہیں ہے اور یہ تصور بہت عام کیا جارہا ہے کہ سرخ گوشت انسانی جسم میں بے شمار بیماریوں کا باعث بن رہا ہے جوکہ سراسر غلط سوچ ہے سرخ گوشت میں ایسے معدنیات ہیں جو انسانی صحت پر مثبت اثرات مرتب کرتے ہیں، سرخ زیادہ نہ کھایا جائے لیکن ایسا بھی نہ ہوں کہ بالکل نہ کھایا جائے، ڈائریکٹر پاکستان اسٹینڈرڈ اینڈ کورالٹی کنٹرول اتھارٹی انجینئر اختر اے بوگیو نے کہا کہ بین الاقوامی کھانے پینے کی اشیاء کے بنائے گئے معیار کو مد نظر رکھنا ایک حد تک ضروری ہے۔  
     
     
   
     
     

 

 

 

 

 
 
     
 

Copyright © 2011-2012 Karachi Metropolitan Corporation. All rights reserved.
The KMC will not be responsible for the content of external internet sites. / Login  / Webmail  / Webmail 2  / 1339 Executive Dashboard